Aye Watan Tera Bhala Ho Song by ISPR

6
58
Aye Watan Tera Bhala Ho Mp3

Ae Watan Tera Bhala Ho song mp3 download with lyrics in Urdu.

Aye Watan Tera Bhala Ho Mp3:

Download Song Here (Right click and choose Save Link As)

 

 
 

 

Aye Watan Tera Bhala Ho Lyrics:

Aye Watatn Tera Bhala Ho Lyrics

Lyrics in Roman:

peshani se tapka ho jo suraj se mila ho
behte hue pani me jo ruka baraf jala ho

ik mot ho atraf me mabain ghira ho
ho khak nasheen or jo mangta dua ho
ghar ak badan khaki ke jeene ki waja ho

ae watan tera bhala ho bhala ho bhala ho
ae watan tera bhala ho bhala ho bhala ho

maroof he wo soch jise sach ka yaqeen he
nayab hen wo dil ke jinhen khof nahi he
masroof hen ik kam me jo kam zameen he
matti ke liye ho to hamen har haseen he
raste me kabhi agey barha pechey mura ho

ho khak nasheen or jo badal ka dhuaan ho
ghar ak badan khaki ke jeene ki waja ho

ae watan tera bhala ho bhala ho bhala ho
ae watan tera bhala ho bhala ho bhala ho

har fail teri waja se bekar kia na
mange zameen jan bhe to inkar kia na

dharti ke dukhon ki karen shab o roz ayadat
haari ko munafa he watan jam e shahadat

dharti se uthe apni zameen po jo gira ho
ho khak nasheen or jo badal ka dhuaan ho
ghar ak badan khaki ke jeene ki waja ho

ae watan tera bhala ho bhala ho bhala ho
ae watan tera bhala ho bhala ho bhala ho

 

Song Lyrics in Urdu Written:

اے وطن تیرا بھلا ہو ۔
پیشانی سے ٹپکا ہو جو سورج سے ملا ہو
بہتے ہوئے پانی میں جو رکا برف جلا ہو
اک موت ہو اطراف میں مابین گھرا ہو
ہو خاک نشیں اور جو مانگتا دعا ہو
گھر ایک بدن خاکی کے جینے کی وجہ ہو
اے وطن تیرا بھلا ہو بھلا ہو بھلا ہو
اے وطن تیرا بھلا ہو بھلا ہو بھلا ہو
معروف ہے وہ سوچ جسے سچ کا یقیں ہے
نایاب ہیں وہ دل کہ جنہیں خوف نہیں ہے
مصروف ہیں اک کام میں جو کام زمیں ہے
مٹی کے لیے ہو تو ہمیں ہار حسیں ہے
رستے میں کبھی آگے بڑھا پیچھے مڑا ہو
ہو خاک نشیں اور جو بادل کا دھواں ہو
گھر ایک بدن خاکی کے جینے کی وجہ ہو
اے وطن تیرا بھلا ہو بھلا ہو بھلا ہو
اے وطن تیرا بھلا ہو بھلا ہو بھلا ہو
ہر فعل تیری وجہ سے بے کار کیا نہ
مانگے یہ زمیں جاں بھی تو انکار کیا نہ
دھرتی کے دکھوں کی کریں شب و روز عیادت
ہاری کو منافع ہے وطن جامِ شہادت
دھرتی سے اٹھے اپنی زمیں پہ جو گرا ہو
ہو خاک نشیں اور جو بادل کا دھواں ہو
گھر ایک بدن خاکی کی جینے کی وجہ ہو
اے وطن تیرا بھلا ہو بھلا ہو بھلا ہو
اے وطن تیرا بھلا ہو بھلا ہو بھلا ہو

 

 
 

 

6 COMMENTS

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)