Aye Naseeb Mere Naseeb Tu

0
35

 

 

Aye naseeb maire naseeb tu, Zara sabr rakh zara sabr kar
Wo bulayen gey hamen ek din, Jo nashen hen arshon ke arsh par

Ke wo jantey hen dilon ko bhe, Or jante hen dilon ki bhi
Ke wo dil nashen hen dilon ke bhe, Zara or dil se tu araz kar

Tu marez-e-ishq e rasool he, Or jahan e naseeb ye maraz he
Wo tabeeb e aalam e maraz hen, Kyun sisak raha he tu marz par

Jo asar karey arshon ke par, Tu suna kuch easi kamaal-e-tarz
Ja sisak tu phir usi taraz pe, Ke wo aayen gy teri tarz per

Jo bhara he daman gunahon se, To kar tauba or ye aqida rakh
Dikha phir nadamatein sajde me, Wo jeelayenge tujhe hashar par

Yahi hasrat e‘ Mehboob‘ he, Wo bulayein farsh e madena or
Karon ankhein apni me band udhar, So jaun phir usi farsh par

اے نصیب میرے نصیب تو، ‍ژرا صبر رکھ ژرا صبر کر
وہ بلايں گے ہمیں اک دن، او نشیں ہیں عرشوں کے عرش پر
کہ وہ جانتے ہیں دلوں کو بھی اور جانتے ہیں دلوں کو بھی
کہ وہ دل نشین ہیں دلوں کے بھی، ژرا اور دل سے تو عرض کر
تو مریض عشق رسول ہے، اور جہان نصیب یہ مرض ہے
وہ طبیب عالم مرض ہے، کیوں سسک رہا ہے تو مرض پر
جو اثر کرے عرشوں کے پار، تو سنا کچھ ایسی کمال ترز
جا سسک تو پھر اسی ترز پہ، کہ وہ آيں گے تیری ترز پر
جو بھرا ہے دامن گناہوں سے، تو کر توبہ اور یہ عقیدہ رکھ
دکھا پھر ندامتیں سجدے میں، وہ جیلاينگے تجھے حشر پر
یہی حسرت محبوب ہے، وہ بلايں عرش مدینہ اور
کروں آنکھیں اپنی میں بند ادھر، سو جاؤں میں پھر فرش پر

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)