Lehje Hawae Sham Ke Namnak Ho Gae!!

0
55

barish hui to phoolon ke tan chaak ho gae
mosam ke hath bheeg ke saffak ho gae

badal ko kia khabar he ke barish ki chah me
kese buland o bala shajar khak ho gae

jugnu ko din ke waqt parakhne ki zid kren
bachey hamare ahd ke chalak ho gae

lehra rahi he baraf ki chadar hata ke ghas
sooraj ki sheh pe tinke bhi bebak ho gae

basti me jitne aab gazida thay sab ke sab
darya ke rukh badalte hi tairak ho gae

sooraj dimagh log bhi ablagh e fikar me
zulf e shab e firaq ke pechak ho gae

jab bhi ghareeb e sheher se kuch guftagu hui
lehje hawae sham ke namnak ho gae

 

 

Get More Urdu Ghazals Here

 

بارش ہوئی تو پھولوں کے تن چاک ہو گئے
موسم کے ہاتھ بھیگ کے سفاک ہو گئے

بادل کو کیا خبر کے بارش کی چاھ میں
کتنے بلند و بلا شجر خاک ہو گئے

جگنو کو دن کے وقت پکڑنے کی ضد کریں
بچے ہمارے عہد کے چالاک ہو گئے

لہرا رہی ہے برف کے چادر ہٹا کے گھاس
سورج کی شہہ پہ تنکے بھی بیباک ہو گئے

جب بھی غریب شہر سے کچھ گفتگو ہوئی
لہجے ہوا شام کے نم ناک ہو گئے

ساحل پہ جتنے آب گزیدہ تھے سب کے سب
دریا کے رخ بدلتے ہی تیراک ہو گئے . . . !

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)