Wo Kehkashan Wo Rahe Raqs Hi Na Rahi

2
420
john elia

Wo Kehkashan Wo Rahe Raqs Hi Na Rahi
Hum Ab Kahin Bhi Rahen, Jab Teri Gali Na Rahi

Tumhare Baad Koi Khas Farq To Na Hua
Jazeen Qadar Ke Woh Pehli Si Zindagi Na Rahi

Ye Zikr Kiya Keh Khurd Mein Boht Tasanno Hai
Sitm Ye Hai Keh Junoon Mein Bhi Saadgi Na Rahi

Qalam Ro e Gham e Janan Hui Hai Jab Se Tabah
Dil o Nazr Ki Fazaon Mein Zindagi Na Rahi

Nikaal Daliye Dil Se Hamari Yaadon Ko
Yaqeen Kijiye Hum Mein Woh Baat Na Rahi

Jahan Faroz Tha, Yadish Bakhair Apna Junoon
Phir Is Ke Baad Kisi Shay Mein Dilkashi Na Rahi

Dikhayen Kiya Tumhen Daaghon Ki Lala Angezi
Guzar Gayin Woh Baharein, Wo Fasl Na Rahi

Woh Dhoondte Hain Sar e Jada e Umeed Kise
Wahan To Qaafle Walon Ki Gard Bhi Na Rahi

Poet: John Elia
Book: Lekin
 

 
[adsense_inserter id=”6236″]  

 

Wo Kehkashan Wo Rah e Raqs Hi Na Rahi In Urdu Written:

[pukhto_lek]

وہ کہکشاں وہ رہ ِ رقص ِ رنگ ہی نہ رہی
ہم اب کہیں بھی رہیں، جب تری گلی نہ رہی

تمارے بعد کوئی خاص فرق تو نہ ہوا
جزیں قدر وہ پہلی سی زندگی نہ رہی

یہ ذکر کیا کہ خرد میں بہت تصنع ہے
ستم یہ ہے جنوں میں بھی سادگی نہ رہی

قلمرو ِ غم ِ جاناں ہوئی ہے جب سے تباہ
دل و نظر کی فضاوں میں زندگی نہ رہی

نکال ڈالیے دل سے ہماری یادوں کو
یقین کیجیے ہم میں وہ بات ہی نہ رہی

جہاں فروز تھا یادش بخیر اپنا جنوں
پھر اُس کے بعد کسی شے میں دل کشی نہ رہی

دکھائیں کیا تمہیں داغوں کی لالہ انگیزی
گزر گئیں وہ بہاریں، وہ فصل ہی نہ رہی

وہ ڈھونڈتے ہیں سر جادہ امید کسے
وہاں تو قافلے والوں کی گرد بھی نہ رہی

جون ایلیا
لیکن

[/pukhto_lek]

 

 
[adsense_inserter id=”6236″]  

 

2 COMMENTS

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)