Kis Ko Maloom Tha

1
45
amjad islam amjad

Kisko Maloom Tha Ghazal by Amjad Islam Amjad

 

 

Yun hi chalte hue raastoo me kai hamsafar jo mile
Aur bicharte gai
Aate jaate hue mousamo ki tarah
Aap hi apni gard safar ho gai
Na kabhi me ne phir mur ke dekha unhai aur na socha kbhi
Wo kha kho gai
Jo gai, so gai
Phir ye kese hua!
Yu hi ik ajnabi dekhte dekhte
Dil me utra, nazar me sama gia
Aur dhanak rang jazbe saja sa gia
Jese baadal koi, be iraada yunhi, meri chat pe ruka
Aur barse bina us pe tehra rha
Kia tamasha hua, saamne thi nadi aur koi tishna lab
Us ko takta raha aur paisa rha

Ik lamhe me simte gi ye daastaa
Kis ko maloom tha!
Tum milo ge mujhe is tarah be gumaa
Kis ko maloom tha!

 

Kis Ko Maloom Tha in Urdu Fonts:

یوں ہی چلتے ہوۓ راستوں میں کوئ ہم سفر جو ملے
اور بچھڑتے گیۓ
آتے جاتے ہوۓ موسموں کی طرح
آپ ہی اپنی گرد سفر ہو گیۓ
نہ کبھی میں پھر مڑ کے دیکھا انہیں اور نہ سوچا کبھی
وہ کہاں کھو گیۓ
جو گیۓ، سو گیۓ!
پھر یہ کیسے ہوا!
یوں ہی ایک اجنبی دیکھتے دیکھتے
دل میں اترا، نظر میں سما گیا
اور دھنک رنگ جزبے سجا سا گیا
جیسے بادل کوئ، بے ارادہ یونہی، میری چھت پہ رکا
اور برسے بنا اس پہ ٹہرا رہا
کیا تماشہ ہوا، سامنے تھی ندی اور کوئ تشنہ لب
اس کو تکتا رہا اور پیاسا رہا
اک لمحے میں سمٹے گی یہ داستاں
کس کو معلوم تھا!
تم ملو گے مجھے اس طرح بے گماں
کس کو معلوم تھا!

 

 

1 COMMENT

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)