Jab Shab Ke Shikasta Zeenon Se

0
237
amjad islam amjad

Jab Shab Ke Shikasta Zeenon Se Mahtaab Utarne Lagta He
Jab Gham Ke Sard Alau Me Umeedain Bujhne Lagti Han,
Jab Dil Ke Sho Samandar Me Aawazen Marne Lagti Han,
Jab Mosam Haath Nahin Aate Jab Titli Baat Nahi Karti,
Jab Zinda Rehna Ik Be Maani Kaam Dikhaayi Deta He
Jab Aane Wala Har Lamha Dashnam Dikhai Deta He
Jab Yaad Ke Gehre Sannate Me Chehre Gum Ho Jate Han
Jab Dard Se Bojhal Aankho Me Gardaab Se Parne Lagte Han
Jab Shamai Gul Ho Jaati Han Jab Khwuab Bikharne Lagte Han
Us Waqt Agar Tum Aa Jao..

 
[adsense_inserter id=”6236″]  

Jab Shab Ke Shikasta Zeenon Se by Amjad Islam Amjad in Urdu Written:

جب شب کے شکستہ زینوں سے مہتاب اترنے لگتا ہے
جب غم کے سرد الاؤ میں امیدیں بجھنے لگتی ہیں،
جب دل کے شوہ سمندر میں آوازیں مرنے لگتی ہیں،
جب موسم ہاتھ نہیں آتے جب تتلی بات نہیں کرتی
جب زندہ رہنا اک بے معنی کام دکھائ دیتا ہے
جب آنے والا ہر لمحہ دشنام دکھائ دیتا ہے
جب یاد کے گہرے سناٹے میں چہرے گم ہو جاتے ہیں
جب درد سے بوجھل آنکھوں میں گرداب سے پڑنے لگتے ہیں
جب شمعیں گل ہو جاتی ہیں جب خواب بکھرنے لگتے ہیں
اس وقت اگر تم آجاؤ!!
امجد اسلام امجد

 

[adsense_inserter id=”3414″]

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)