Kahan Aake Rukne The Raaste Poetry

0
56
amjad islam amjad

kahan aake rukne the raaste kahan mor tha usay bhool ja
wo jo mil gaya usay yaad rakh’ jo nahin mila usay bhool ja
wo tere naseeb ki barishain kisi aur chat pe baras gayeen
dil e bekhabar meri baat sun usay bhool ja usay bhool ja
main to gum tha tere dhyaan main teri aas tere gumaan main
sab keh gayi mere kaan main mere saath aa usay bhool ja
kyun ataa hua he ghubaar main ghum e zindagi k fishaar main
wo jo darj tha tere bakht main’ so wo ho gya usay bhool ja
jo bisaat e jaan hi ulat gya wo jo raaste se palat gaya
usay rokne se hasool kya usay mat bula usay bhool ja
tujhe chand ban k mila tha jo tere sahilon pe khila tha jo
wo tha darya wisaal ka so utar gaya usay bhool ja….

 

 

Kahan Aake Rukne The Raaste Lyrics in Urdu Written:

کہاں آ کے رکنے تھے راستے کہاں موڑ تھا اسے بھول جا
وہ جو مل گیا اسے یاد رکھ جو نہیں ملا اسے بھول جا
وہ تیرے نصیب کی بارشیں کسی اور چھت پہ برس گئیں
دل بے خبر میری بات سن اسے بھول جا اسے بھول جا
میں تو گم تھا تیرے دھیان میں تیری آس تیرے گمان میں
سب کہ گئ میرے کان میں میرے ساتھ آ اسے بھول جا
کیوں عطا ہوا ہے غبار میں غم زندگی کے فشار میں
وہ جو درج تھا تیرے بخت میں سو وہ ہو گیا اسے بھول جا
جو بساط جاں ہی الٹ گیا وہ جو راستے سے پلٹ گیا
اسے روکنے سے حصول کیا اسے مت بلا اسے بھول جا
تجھے چاند بن کے ملا تھا جو تیرے ساحلوں پہ کھلا تھا جو
وہ تھا دریا وصال کا سو اتر گیا ہسے بھول جا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)