Payam e Subah Allama Iqbal

0
58
Allama Iqbal Poems

 

 

Ujaala Jub Huwa Rukhsat Jabeen-e-Shub Kee Afshan Ka
Nasim-e-Zindagi Pygham Layi Subah-e-Khandaan Ka
Jagaya Bulbul-e-Rangin Nava Ko Asheyany Main
Kinarey Khait Kay Shana Hilaya Uss Nay Dehkan Ka
Telism-e-Zulmat-e-Shub Surah Wan-Noor Say Tora
Andhairy Main Uraya Taj-e-Zer Shama-e-Shabistan Ka
Perha Khauwabidgan-e-Der Per Afsoon-e-Baydari
Berhman Ko Deya Peghaam Khurshid-e-Durakhshan Ka
Hovi Bam-e-Haram Per Aa Kay Un Goya Moazzan Say
Naheen Khatka Taire Dil Main Namud-e-Mehar-e-Taban Ka

Pukaari Iss Tarha Diwar-e-Gulshan Per Kharay Ho Ker
Chatak o Ghuncha-e-Gul Tu Moazzan Hey Gulistan Ka
Deya Yeh Hukam Saihra Main Chalo Aey Qafile Walon,
Chamaknay Ko Hey Jugnoo Ban Kay Har Zarra Byabaan Ka
Sooye Gor-e-Ghariban Jub Gayi Zindon Kee Busti Say
To Yoon Boli Nazara Daikh Ker Shehar-e-Khamoshan Ka
Abhee Aram Say Laite Rahu, Men Pher Bhee Aaon Gee
Sula Doon Gi Jahan Ko, Khauwaab Say Tum Ko Jagaon Gee

اجالا جب ہوا رخصت جبین شب کی افشاں کا
نسیم زندگی پیغام لائ صبح خنداں کا
جگایا بلبل رنگیں نوا کو آشیانے میں
کنارے کھیت کے شانہ ہلایا اس نے دہقان کا
طلسم ظلمت شب سورہ والنور سے توڑا
اندھیرے میں اڑایا تاج زر شمع شبستان کا
پڑھا خوابیدگان دیر پر افسون بیداری
برہمن کو دیا پیغام خورشید درخشاں کا
ہوئ بام حرم پر آ کے یوں گویا موزن سے
نہیں کھٹکا ترے دل میں نمود مہر تاباں کا؟
پکاری اس طرح دیوار گلشن پہ کھڑے ہو کر
چٹک او غنچہ گل! تو موذن ہے گلستان کا
دیا یہ حکم صحرا میں چلواے قافلے والو!
چمکنے کو ہے جگنو بن کہ ہر ذرہ بیاباں کا
سوۓ گور غریباں جب گئ زندوں کی بستی سے
تو یوں بولی نظارہ دیکھ کر شہر خموشاں کا
ابھی آرام سے لیٹے رہو، میں پھر بھی آؤں گی
سلا دوں گی جہاں کو، خواب سے تم کو جگا وں گی

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)