Akhri Baat Amjad Islam Amjad

0
355
amjad islam amjad

Akhri Baat Ghazal by Amjad Islam Amjad

 

 
[adsense_inserter id=”6236″]  

 

Tulu e Shams e Mufarqat Hai
Purani Kirnein Naye Makanon Kay Aanganon Mein Laraz Rahi Hain
Fasil e Shahar e Wafa Ke Rozan Chamaktey Zarron Se Bhar Gayi Hain
Gaye Dinon Kii Aziz Baatein Nigaar Subahain Gulab Raatein
Bisaat-e-Dil Bhi Ajeeb Shai Hai Hazaar Jeeten Hazaar Maatein
Judaaiyon Ki Hawaain Lamhon Ki Khush Matti Uraa Rahi Hain
Gayi Ruton Ka Malaal Kab Tak
Chalo Ke Shaakhen To Tut’ti Hain
Chalo Ke Qabron Pe Khun Rone Se
Apni Aankhein Hi Phutati Hain
Ye Mor Wo Hai Jahaan Se Mere Tumhaare Raste Badal Gaye Hain
Puraani Raahon Ko Lautna Bhi Hamari Taqdir Mein Nahin Hai
Ke Raaste Bhi Hamare Qadamon Ke Saath Aage Nikal Gaye Hain

Tulu e Shams e Mufarqat Hai
Tum Apani Aankhon Mein Jhil Milaate Huye Sitaaron Ko Maut Dedo
Gayi Ruton Ke Tamaam Phuulon Tamaam Khaaron Ko Maut Dedo
Naye Safar Ko Hayaat Bakhsho
Ke Pichali Raahon Pe Sabt Jitane Naqoosh-e-Paa Hain
Wo Baar Honge
Hawa Uraaye Ke Tum Uraao

TULU-E-SHAMS-E-MUFARAQT HAI in Urdu Fonts

طلوع شمس مفارقت ہے
پرانی کرنیں نئے مکانوں کے آنگنوں میں لرز رہی ہیں
فصیل شہر وفا کے روزن چمکتے زروں سے بھر گئے ہیں
گئےدنوں کی عزیز باتیں نگار صبحیں گلاب راتیں
بساط دل بھی عجیب شے ہے ہزار جیتیں ہزار ماتیں
جدائیوں کی ہوائیں لمحوں کی خوش مٹی اڑا رہی ہیں
گئ رتوں کاملال کب تک
چلو کہ شاخیں تو ٹوٹتی ہیں
چلو کہ قبروں پہ خون رونے سے
اپنی آنکھیں ہی پھوٹتی ہیں
یہ موڑ وہ ہے جہاں سے میرے تمہارے راستے بدل گۓ ہیں
پرانی راہوں کو لوٹنا بھی ہماری تقدیر میں نہیں
کہ راستے بھی ہمارے قدموں کے ساتھ آگے نکل گۓ ہیں

طلوع شمس مفارقت ہے
تم اپنیآنکھوں میں جھلملاتے ستاروں کو موت دے دو
گئی رتوں کے تمام پھولوں تمام خاروں کو موت دےدو
نۓ سفر کو حیات بخشو
کہ پچھلی راہوں پہ ثبت جتنے نقوش پا ہیں
وہ بار ہونگے
ہوا اڑائے کہ تم اڑاؤ

 

 
[adsense_inserter id=”3414″]  

 

Tags: talu e shams e mufarqat hai

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)