Chand Madham Hai Aasman Chup Hai Poetry

0
48
sahir ludhiyanvi poetry

 

 

Chaand Maddham He Aasmaan Chup He
Neend Ki Goad Me Jahaa Chup He
Door Wadi Me Doodhiya Baadal
Jhuk Ke Parbat ko Pyar Karte He
Dil Me Naakam Hasarate Laikar
Ham Taira Intezaar Karte He
In Bahaaro Ke Saayai Me Aa Jaa
Phir Mohabbat Jawan Rahe Na Rahe
Zindagi Taire Na-Muraado Par
Kal Talak Meharabaa Rahe Na Rahe
Roz Ki Tarah Aaj Bhi Taare
Subah Ki Gard Me Na Kho Jaaye
Aa Taire Gham Me Jaagti Aankhe
Kam Se Kam Ek Raat So Jaaye
Chaand Maddham He Aasmaa Chup He
Neend Ki Goad Me Jahaa Chup He

 

 

چاند مدھم ہے آسماں چپ ہے
نیند کی گود میں جہاں چپ ہے
دور وادی میں دودھیا بادل
جھک کے پربت کو پیار کرتے ہیں
دل میں ناکام حسرتیں لے کر
ہم ترا انتظار کرتے ہیں
ان بہاروں کے ساۓ میں آجا
پھر محبت جواں رہے نہ رہے
زندگی تیرے نا مرادوں پر
کل تلک مہرباں رہے نہ رہے
روز کی طرح آج بھی تارے
صبح کی گرد میں نہ کھو جائیں
آ تیرے غم میں جاگتی آنکھیں
کم سے کم ایک رات سو جائیں
چاند مدھم ہے آسماں چپ ہے
نیند کی گود میں جہاں چپ ہے

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)