Mohabbat Tark Ki Maine Poetry

0
68
sahir ludhiyanvi poetry

 

 

Mohabbat Tark Ki Mene, Gareban Si Liya Mene,
Zamaane Ab To Khush Ho Zehar Yeh Bhi Pi Liya Mene,
Abhi Zinda Hun Magar Sochta Rahta Hun Khilvat Me,
Ke Ab Tak Kis Tamana Ke Sahare Ji Liya Mene,
Unhe Apnaa Nahi Sakta Magar Itna Bhi Kya Kam Hai,
Ke Kuch Muddat Haseen Khawbo Mein Kho Ker Ji Liya Mene,
Bas Ab To Daman-e-dil Chor Do Bekar Umeedon,
Bohat Dukh Sah Liye Mene, Bohat Din Ji Liya Mene..

 

 

،محبت ترک کی میں نے، گریباں سی لیا میں نے
،زمانے اب تو خوش ہو زہر یہ بھی پی لیا میں نے
، ابھی زندہ ہوں مگر سوچتا رہتا ہوں خلوت میں
،کہ اب تک کس تمنا کے سہارے جی لیا میں نے
،انہیں اپنا نہیں سکتا مگر اتنا بھی کیا کم ہے
،کہ کچھ مد‏ت حسیں خوابوں میں کھو کر جی لیا میں نے
،بس اب تو دامن دل چھوڑ دو بے کار امیدوں
بہت دکھ سہ لئے میں نے، بہت دن جی لیا میں نے۔۔

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)