Chupke Chupke Asar Karta Hai

0
168
amjad islam amjad

Chupke Chupke Asar Karta Hai Ghazal by Amjad Islam Amjad

 

[adsense_inserter id=”3100″]

 

chupke chupke asar karta hai
ishq cancer ki tarah barhta hai

jo koi ji na sake mar jaaye
aap kaa naam abas leta hai

kaun sunta hai kisi ki wipda
sab ke maathe pe yahi qissa hai

koi darta hai bhari mahafil me
koi tanhai me hans parta hai

yahi jannat hai yahi hai dozakh
aur dekho to yahi duniya hai

sab ki qismat me fana hai jab tak
aasmaano pe koi zinda hai

wo Khudaa hai to zameen par aaye
hashr ka din to yahaa barpaa hai

saans roke hue baitho ‘Amjad
waqt dushman ki tarah chalta hai

 

Chupke Chupke Asar Karta Hai Poetry in Urdu Written:

چپکے چپکے اثر کرتا ہے

عشق کینسر کی طرح بڑھتا ہے

جو کوئ جی نہ سکے مر جاۓ

آپ کا نام عبث لیتا ہے

کون سنتا ہے کسی کی وپدا

سب کے ماتھے پہ یہی قصہ ہے

کوئ ڈرتا ہے بھری محفل میں

کوئ تنہائ میں ہنس پڑتا ہے

یہی جنت ہے یہی ہے دوزخ

اور دیکھو تو یہی دنیا ہے

سب کی قسمت میں فنا ہے جب تک

آسماں پہ کوئ زندہ ہے

وہ خدا ہے تو زمین پر آۓ

حشر کا دن تو یہاں برپا ہے

سانس روکے ہوۓ بیٹھو امجد

وقت دشمن کی طرح چلتا ہے

 

[adsense_inserter id=”3414″]

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)