Jungle Mujh Se Baat To Kar

0
48
amjad islam amjad

Jungle mujh se baat to kar
Dekh kha se aia hoo!
Sannaata he charo janib aur hawa ki sargoshi me
Toote toote se kch jumle
Raat gai hone wali bearish ke qatro ki soorat
Patta patta tapak rahe hai
Teen baras aur sola din pehle ki guzri sham koi
Yahi kahi par ruki hui he
Aur ek gehre saayeoo wale pair pe ab bhi
Ham dono ke naam khude hai
(aur ek dil he jis me koi teer tra zoo kab se he)

Jungle, tere samne us din ham ne kitni baatai ki thi
Tujh ko bhi wo yaad to ho gi
(sab na sahi par thori thori,)
Ye jo hawa ki sargoshi he is ke toote jumlo jesi
Abhi abhi is thamne wali bearish ke in qatro jesi
Teen baras aur sola din ka eke k lamha laia hoo
Jungle mujh se baat to kar dekh kha se aia hoo!

 

 

Jungle Mujh Se Baat To Kar in Urdu Written by Amjad Islam Amjad

جنگل مجھ سے بات تو کر
دیکھ کہاں سے آیا ہوں!
سناٹا ہے چاروں جانب اور ہوا کی سرگوشی میں
ٹوٹے ٹوٹے سے کچھ جملے
رات گیۓ ہونے والی بارش کے قطروں کی صورت
پتہ پتہ ٹپک رہے ہیں
تین برس اور سولہ دن پہلے کی گزری شام کوئ
یہیں کہیں پر رکی ہوئ ہے
اور اک گہرے سایوں والے پیڑ پہ اب بھی
ہم دونوں کے نام کھدے ہیں
(اور اک دل ہے جس میں کوئ تیر ترا زو تب سے ہے)

جنگل، تیرے سامنے اس دن ہم نے کتنی باتیں کی تھیں
تجھ کو بھی وہ یاد تو ہو گی!
(سب نہ سہی پر تھوڑی تھوڑی،)
یہ جو ہوا کی سر گوشی ہے اس کے ٹوٹے جملوں جیسی
ابھی ابھی اس تھمنے والی بارش کے ان قطروں جیسی
تین برس اور سولہ دن کا اک اک لمحہ لایا ہوں
جنگل مجھ سے بات تو کر دیکھ کہاں سے آیا ہوں!

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)