Kuch Aise Ghao Bhi Hote Hain

0
58
amjad islam amjad

Kuch Aisay Ghaao Bhi Hotay Hain

 

 
 

 

Kuch Aise Ghao Bhi Hote Hain
Jinhe Zakhmi Aap Nahi Dhote
Bin Roye Huye Aansoo Ki Tarah
Seene Me Chupa Ke Rakhte Hai
Aur Sari Umar Nahi Rote

Neendein Bhi Muhaiya Hoti Hai
Sapne Bhi Door Nahi Hote
Kyuu Phir Bhi Jaagte Rahte Hai
Kyuu Sari Raat Nahi Sote

Ab Kis Se Kahein Ai Jaan-E-Wafaa
Ye Ahal-E-Wafaa Kis Aag Me Jalte Rahte Hai
Kyuu Bujh Ke Raakh Nahi Hote

کچھ ایسے گھاؤ بھی ہوتے ہیں
جنہیں زخمی آپ نہیں دھوتے
بن روۓ ہوۓ آنسو کی طرح
سینے میں چھپا کہ رکھتے ہیں
اورساری عمر نہیں روتے

نیندیں بھی مہیا ہوتی ہیں
سپنے بھی دور نہیں ہوتے
کیوں پھر بھی جاگتے رہتے ہیں
کیوں ساری رات نہیں سوتے

اب کس سے کہیں اے جان وفا
یہ اہل وفا کس آگ میں جلتے رہتے ہیں
کیوں بجھ کہ راکھ نہیں ہوتے

 

 
 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

:bye: 
:good: 
:negative: 
:scratch: 
:wacko: 
:yahoo: 
B-) 
:heart: 
:rose: 
:-) 
:whistle: 
:yes: 
:cry: 
:mail: 
:-( 
:unsure: 
;-)